صفحہ اول تازہ ترین English
تازہ ترین
میری ٹا ِئم کے شعبے میں نوجوان محققین کی دلچسپی خوش آئیند اور قومی ضرورت ہے: شہریار آفریدی چھاپیے ای میل
تربیت اور ورکشاپ

 وفاقی وزیر شہریار آفریدی نے اسلام آباد میں منعقد ہونے والے میری ٹاَم سمر سکول کو ملک کے سمندری وسائل سے متعلق علمی و تحقیقی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے اہم قرار دیتے ہوئے سراہا اور ایسے اقدامات کو جاری رکھنے پر زور دیتے ہوئےکہا کہ یہ ابھرتے ہوئے محققین اور نوجوان دانشوروں کو اپنی تحقیقات کو ملکی مفاد اور ضروریات کے ساتھ ہم اہنگ کرنے میں مفید ثابت ہونگے ۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
جدید دنیا میں میری ٹائم ڈپلومیسی چھاپیے ای میل
سیمینار

انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز اور میری ٹائم اسٹڈی فورم کے اشتراک سے "جدید دنیا میں میری ٹائم ڈپلومیسی" کے موضوع پر8 اگست 2019 کو منعقد ہونے والے سیمینار میں شرکاءنے جدید دور میں بحری امور پر ہونے والی پیشرفت کو ہوش ربا قرار دیتے ہوئے پاکستان کے محل وقوع میں ہونے والی ترقی پر گفتگو کی اور دفتر خارجہ پر زور دیا کہ وہ اس اہم میدان میں تخصص کے لیے میری ٹائم ڈپلومیسی کا خصوصی شعبہ قایم کرے جہاں پاکستان نیوی، وزارت میری ٹائم افئیرز، وزارت تجارت، وزارت دفاع سمیت دیگر اہم متعلقہ اسٹیک ہولڈروں کے لائژن اہلکار مل کر مربوط حکمت عملی کے ساتھ کام کریں۔ 

مزید پڑھیے۔۔۔
 
اسلام آباد میں نوجوان پالیسی تحقیق کاروں کے لیے میری ٹائم سمر سکول کا آغاز چھاپیے ای میل
تربیت اور ورکشاپ

اکستان میں انفرادی اور اداریاتی پالیسی تحقیق کاروں اور پریکٹیشنرزکے نیٹ ورک میری اسٹڈی فورم کی جانب سے میری ٹائم کے میدان میں دلچسپی رکھنے والے نوجوان محققین کے لیے   5 اگست 2019 سے  خصوصی طور پر پانچ روزہ میری ٹائم سمر سکول کا آغاز کر دیا گیا۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
آئ پی ایس اور آئ ڈی ڈی ڈی آیس کے مابین علمی و تحقیقی میدان میں تعاون کا سمجھوتہ چھاپیے ای میل
اِن ہاؤس

انسٹیٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز، اسلام آباد اور انسٹیٹیوٹ آف ڈائلاگ، ڈویلپمنٹ اور ڈپلومیٹک اسٹڈیز کے مابین علمی اور تحقیقی میدانوں میں تعاون سے متعلق مفاہمتی یادداشت پر دستخط  9 اگست 2019 کو کر دیے گئے۔ اس سجھوتے کا مقصد دونوں اداروں کے درمیان متفرق باہمی دلچسپی کے علمی و تحقیقی امور میں تعاون کی راہ ہموار کرنا تھا۔ آئ پی ایس کے جنرل مینیجر آپریشنز نوفل شاہ رخ اور آئ ڈی ڈی ڈی ایس کے ڈائیریکٹر ولید رسول کے دستخطوں سے تکمیل پانے والی اس مفاہمتی یادداشت میں خصوصی طور پر علمی و دانشورانہ وسائل کے تبادلے، سیمینار، کانفرنسوں،ورکشاپ اور دیگر تربیتی سرگرمیوں کا انعقاد، متفرق اہم موضوعات پر مشترکہ تحقیق، تحقیق کے نتییجے میں تشکیل پانے والے مقالوں کی مشترکہ سُپر ویژن، اور اس سے اخذ کی گئ معلومات اور تجاویز کو متعلقہ با اختیار اداروں اور حکام تک پہنچانے کی کوششوں میں تعاون پر اتفاق کیا گیا۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
مزید مضامین...
«شروعپیچھے12345678910آگےآخر»

صفحہ: 1