صفحہ اول تازہ ترین English
تازہ ترین
ایرانی جوہری معاہدے سے امریکہ کے خروج پر سفارتی ماہرین کی کڑی تنقید چھاپیے ای میل
سیمینار

US-exit-from-Iran-Nuclear-Deal-thumbایرانی جوہری معاہدے سے امریکہ کے خروج کے بعد پاکستان کو ضرورت کی اس گھڑی میں ایران کے لیے ایک متوازن اور غیر جانبدارانہ نقطہ نظر اختیار کرنا چاہیے ۔ سلامتی اور سفارتی شعبے کے ماہرین نے اس رائے کا اظہار انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز اسلام آباد اور انسٹی ٹیوٹ آف میری ٹائم افئیرز کے اشتراک سے آئی پی ایس اسلام آباد میں منعقد ہونے والےایک سیمینار میں کیا ۔سیمینار کا عنوان تھا ’’ ایرانی جوہری معاہدے سے امریکہ کا خروج اور ابھرتی سیاسی و ارضیاتی حرکیات ‘‘۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
اسلامی بنکوں کے لیے شرعی مقاصد پر مبنی اشاریہ کی تیاری چھاپیے ای میل
سیمینار

Developing-Shariah-Objectives-thumbآئی پی ایس کے ریسرچ فیلو ڈاکٹر زاہد صدیق مغل نے  30 اگست2018ء کو انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز اسلام آباد میں منتخب سینئر تعلیمی اور شرعی ماہرین کے اجتماع میں اسلامی بنکنگ اور مالیاتی صنعت کی نمائندگی کرتے ہوئے تحقیق پر مبنی اپنا کام پیش کیا جس کا موضوع تھا ”اسلامی بنکوں کے لیے شرعی مقاصد پر مبنی اشاریہ کی تیاری“۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
پالیسی پرسپیکٹو جلد۱۵ نمبر۲ چھاپیے ای میل
نئی مطبوعات

انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی سٹڈیز کے انگریزی زبان میں مؤقر علمی و تحقیقی مجلے ”پالیسی پرسپیکٹو“ کا تازہ شمارہ (جلد۱۵ نمبر۲، ۲۰۱۸) پاکستان اور پاکستان سے باہر قارئین کے لیے دستیاب ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔
 
ہائیڈروڈپلومیسی: ایٹم سے مسلح پاکستان اور بھارت کے درمیان پانی پر جنگ کی روک تھام چھاپیے ای میل
نئی مطبوعات

اس کتاب میں پاکستان اور بھارت کے درمیان آزادی کے بعد ۱۹۴۷ء سے جاری تعلقات میں سرحدوں کے آرپار پانی کی شراکت کے مسائل پر ہونے والے اتارچڑھاؤ کو بیان کیا گیا ہے۔ ۱۹۶۰ء میں ہونے والے سندھ طاس معاہدے کے باوجود دونوں ممالک کے درمیان اس کی مختلف شقوں کی تعبیر اور پاکستان کے لیے مختص کیے جانے والے دریاؤں پر بھارت کی طرف سے ڈیموں کے تعمیراتی ڈھانچوں کے منصوبوں کے باعث ۱۹۷۰ء کی دہائی سے ہی اختلافات شروع ہوگئے تھے۔ 

مزید پڑھیے۔۔۔
 
«شروعپیچھے12345678910آگےآخر»

صفحہ: 2